the etemaad urdu daily news
آیت شریف حدیث شریف وقت نماز

ای پیپر

To Advertise Here
Please Contact
editor@etemaaddaily.com
نئی دہلی، 18فروری (یواین آئی)ایشاء میں سرفہرست عوامی ذرائع ابلاغ کے ادارے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ماس کمیونکیشن (آئی آئی ایم سی) نئی دہلی کے طلبہ نےہر سال دس فیصد کے اضافے سے بڑھنے والی فیس کے خلاف اپنے مطالبات کے سلسلے میں منگل کے روز سے بھوک ہڑتال شروع کر دی ہے۔طلبہ کا الزام ہے کہ آئی آئی ایم سی انتظامیہ ان کے مطالبات کو مسلسل نظر انداز کر رہا ہے۔ طلبہ نے حال ہی میں فیس جمع کرنے کے لیے جاری نئے سرکلر کو دوبارہ ملتوی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ دسمبر 2019 کے پہلے ہفتے سے شروع ہونے والے احتجاج میں افورڈایبل فیس اسٹرکچر (قابل برداشت فیس نظام)تیار کرنے کی لڑائی میں نیا موڑ آگیا ہے۔
آئی آئی ایم سی کے طالب علموں کا دعویٰ ہے کہ انہوں نے دسمبر 2019 میں فیس سرکلر کو ملتوی کروا کر نصف جنگ تقریباً جیت لی تھی۔ آئی آئی ایم سی انتظامیہ کو مجبوراً ایگزیکٹو کونسل (مجلس عاملہ) کا فوری اجلاس طلب کرنا پڑا تھا۔
طلبہ کاکہنا ہے کہ وہ پرانے فیس اسٹرکچر کو قابل برداشت بنانے کی امید لگائے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 13 جنوری کو جاری سرکلر میں کہا گیا تھا کہ ایگزیکٹو کونسل ایک کمیٹی تشکیل دے گی جو دو مارچ تک طالب علموں کے فیس سے متعلق امور کا جائزہ لےکر متعلقہ افسر کو اپنی رپورٹ سونپے گی۔
آئی آئی ایم سی انتظامیہ نے اچانک 10 فروری کو فیس جمع کرنے کا سرکلر جاری کر دیا۔ طلبہ نے انتظامیہ سے اس پورے واقعہ پر 48 گھنٹے کے اندر اپنا موقف رکھنے کی اپیل کی ہےلیکن 48 گھنٹوں کے گزر جانے کے بعد بھی انتظامیہ خاموشی اختیار کیے ہوئےہے۔ان کا کہنا ہے کہ انتظامیہ ہمیں دھوکہ دے رہا ہے اور تمام قوانین و ضوابط کو طاق پر رکھ کر من مانے طور پر پیسے وصولنا چاہتا ہے۔
آئی آئی ایم سی انتظامیہ کے اس رویہ سے طلبہ میں شدید ناراضگی پائی جاتی ہے۔یہی سبب ہے کہ انھیں اپنے مطالبات کے سلسلے میں منگل کے روز سے بھوک ہڑتال پر بیٹھنا پڑا۔
آٹھ طلبہ جو بھوک ہڑتال پر بیٹھے ہیں ان میں اونتیکا تیواری، آکاش پانڈے، راجن راج، جاگرتی کماری، دیویش مشرا، حامد رضا، رشی کیش شرما، آستھا ستیہ ساچی، گوتم کمار شامل ہیں۔
مسٹر حامد نے کہا ہے کہ آئی آئی ایم سی انتظامیہ نے ہمارے جائز مطالبات اور ایگزیکیٹو کونسل کی ہدایات پر عمل درآمد نہ کروا کر ہمیں دھوکہ دیا ہے۔ ہم اپنے ساتھ ہو نے والے مظالم کو قطعی برداشت نہیں کر سکتے۔
قابل ذکر ہے کہ آئی آئی ایم سی میں 2009۔10میں پوسٹ گریجویٹ ڈپلومہ (پی جی) ریڈیو اینڈ ٹیلی ویژن کی فیس 76000، پی جی ڈپلومہ ایڈ-پی آر(اشتہار، رابطہ عامہ)کی فیس 48000، پی جی ڈپلومہ ای جے (انگلaش جرنلزم)کی فیس 34000،پی جی ڈپلومہ ایچ جے (ہندی جرنلزم) کی فیس 34000 اور پی جی ڈپلومہ اردو، اڑیہ، ملیام جرنلزم کی فیس 20000 روپیے تھی جو فی سنہ دس فیصد کے اضافے کے ساتھ ان تمام کورسیز کی فیس علیٰ الترتیب فی الحال 168500، 131500، 95500، 95500 اور 55500 روپیے ہو گئی ہے۔ واضح رہے کہ دس برسوں کے اندر فیس میں علیٰ الترتیب 121 فیصد، 173 فیصد، 181 فیصد، 181 فیصد اور 175 فیصد کا اضافہ کیا گیا ہے۔
طلبہ کے مطابق اگر سرکاری تعلیمی اداروں میں یہ فیس اضافہ یونہی جاری رہا تو اعلیٰ تعلیم متوسط اورپچھڑے طبقوں کی قوت سےباہر ہوجائے گی۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh
http://st-josephs.in/

اوپینین پول

کیا ہندوستان میں کورونا وائرس کے معاملات پر قابو پانے کے لئے 21 دن کا لاک ڈاؤن ضروری ہے؟

ہاں
نہیں
کہہ نہیں سکتے
https://www.darussalambank.com

موسم کا حال

حیدرآباد

etemaad rishtey - a muslim matrimony
© 2020 Etemaad Urdu Daily, All Rights Reserved.