the etemaad urdu daily news
آیت شریف حدیث شریف وقت نماز

ای پیپر

To Advertise Here
Please Contact
editor@etemaaddaily.com

نئی دہلی، 31 اکتوبر (ایجنسی) بہوجن سماج پارٹی کی صدر مایاوتی نے سردار بلبھ بھائی پٹیل کا گجرات میں بحیرہ عرب کے ساحل پر نصب مجسمہ کا نام "اسٹیچو آف یونٹی" انگریزی میں رکھنے پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ یہ مرکزی حکومت کی منشا کو ظاہر کرتا ہے۔

محترمہ مایاوتی نے بدھ کو یہاں سردار پٹیل کی سالگرہ کے موقع پر پر ان کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ اور ان کے ساتھیوں کو بابا صاحب ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر سمیت دلتوں اور دیگر پسماندہ طبقوں میں پیدا ہونے والے عظیم سنتو، گرووں اور عظیم لوگوں کے احترام میں بی ایس پی حکومت کی طرف سے تعمیر خوبصورت مقامات ، یادگاروں اور پارکوں وغیرہ کو فضول خرچی بتا کر اس کی تنقید کرنے کے لیے معافی مانگنی چاہئے۔
محترمہ مایاوتی نے کہا کہ، "سردار پٹیل، اپنی بول چال، رہن سہن اور کھانے پینے کی عادتوں میں مکمل ہندوستانیت اور ہندوستانی ثقافت کی ایک مثال تھے، لیکن ان کے عظیم مجسمے کا نام ہندی اور ہندوستانی ثقافت کے نزدیک ہونے کے بجائے "اسٹیچو آف یونٹی145 جیسا انگریزی نام رکھنا کتنی سیاست پر مبنی ہے اور بی جے پی کی ان میں کتنی عقیدت ہے، یہ ملک کے عوام اچھی طرح میں سمجھ رہے ہیں "۔

بی ایس پی لیڈر نے کہا کہ سردار پٹیل خالص طور پر ہندوستانی ثقافت اور تہذیب کے پروردہ تھے لیکن ان کی مورتی پر غیر ملکی تعمیرات کی چھا پ ان کے حامیوں کو ہمیشہ دکھ دے گی۔ انهوں نے کہا کہ سردار پٹیل اور بابا صاحب قومی شخصیت کے مالک تھے لیکن بی جے پی اور مرکز حکومت نے انہیں علاقائیت کے دائرے میں قید کردیا۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh
http://st-josephs.in/

اوپینین پول

کون سی سیاسی جماعت مرکز میں حکومت بنائیں گی؟

این ڈی اے (بی جے پی)
یو پی اے (کانگریس)
مہا گھٹ بندھن
http://www.darussalambank.com

موسم کا حال

حیدرآباد

etemaad rishtey - a muslim matrimony
© 2019 Etemaad Urdu Daily, All Rights Reserved.