the etemaad urdu daily news
آیت شریف حدیث شریف وقت نماز

ای پیپر

To Advertise Here
Please Contact
editor@etemaaddaily.com
نئی دہلی، 22 فروری (یو این آئی) وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) نے آج کہا کہ اگر ملک کا مسلم سماج 'غزنی' اور 'بابر' کے بجائے 'چےرامن'، 'داراشكوه' اور 'کلام' کی وراثت کو قبول کرے اور تعاون مانگے تو ہندو سماج اجودھیا میں مسجد کی تعمیر میں آگے بڑھ کر مدد کرنے کو تیار ہے۔
وی ایچ پی کے جوائنٹ جنرل سکریٹری ڈاکٹر سریندر جین نے صحافیوں کو بتایا کہ ہندوستان میں پہلی مسجد کیرالہ کے چےرامن میں ایک ہندو راجہ نےبنوائی تھی۔ اگر مسلم سماج اسی 'چےرامن' کی وراثت کو قبول کرتے ہوئے تعاون طلب کرتا ہے تو یقیناً ہندو سماج مدد کرے گا۔
انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے آج مسلم معاشرے کا بڑا طبقہ غزنی، بابر اور اورنگ زیب کی وراثت کو مان رہا ہے جبکہ اسی ملک میں داراشكوه اور اے پی جے عبدالکلام کی وراثت بھی ہے۔ اگر وہ غزنی اور بابر کی وراثت کے علاوہ داراشكوه اور کلام کی وراثت کو قبول کرتے ہیں اور ہندو سماج سے تعاون مانگتے ہیں تو آج بھی ہندو سماج چےرامن کے جذبے سے تعاون کرنے کو تیار ہے۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh
http://st-josephs.in/

اوپینین پول

کیا ہندوستان میں کورونا وائرس کے معاملات پر قابو پانے کے لئے 21 دن کا لاک ڈاؤن ضروری ہے؟

ہاں
نہیں
کہہ نہیں سکتے
https://www.darussalambank.com

موسم کا حال

حیدرآباد

etemaad rishtey - a muslim matrimony
© 2020 Etemaad Urdu Daily, All Rights Reserved.