the etemaad urdu daily news
آیت شریف حدیث شریف وقت نماز

ای پیپر

To Advertise Here
Please Contact
editor@etemaaddaily.com

اوپینین پول

کیا ہندوستان میں خواتین کی حفاظت اب بھی دور کا خواب ہے؟

ہاں
نہیں
کہہ نہیں سکتے
نئی دہلی, 30 ستمبر (یو این آئی) بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سینئر رہنماؤں ایل کے اڈوانی اور ڈاکٹر مرلی منوہر جوشی نے بابری مسجد انہدام مقدمے میں بدھ کے روز بری ہونے پر دلی خوشی کا اظہار کیا ہے۔
لکھنؤ میں سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) کی خصوصی عدالت نے آج ایودھیا میں 6 دسمبر 1992 کو بابری مسجد کے ڈھانچے کو مسمار کرنے کے معاملے میں دونوں رہنماؤں کو بری کردیا۔
مسٹر اڈوانی نے ٹیلی ویژن پر سی بی آئی کورٹ کے فیصلے کے بارے میں 27 پرتھوی راج روڈ پر واقع اپنی رہائش گاہ پر معلومات حاصل کیں۔ اپنے بیان میں ، مسٹر اڈوانی نے کہا کہ انہوں نے بابری مسجد انہدام کیس میں خصوصی عدالت کے اہم فیصلے کا پورے دل سے خیرمقدم کیا۔ اس فیصلے سے رام جنم بھومی تحریک کے حوالے سے ان کی ذاتی اور بی جے پی کے اعتماد اور وابستگی کا ثبوت ہے۔
انہوں نے کہا کہ وہ بے حد خوش ہوئے کہ سپریم کورٹ کے نومبر 2019 کے فیصلے کے بعد یہ ایک اور اہم فیصلہ ہے ، جو ایودھیا میں عظیم الشان رام مندر کو دیکھنے کے خواب کی تعبیر کی راہ ہموار کرتا ہے ، جس کا سنگ بنیاد 5 اگست 2020 رکھا گیا تھا -انہوں نے کہا ، "میں اپنی پارٹی کارکنوں ، قائدین ، ​​سنتوں اور ان سب کا شکرگزار ہوں جن کی بے لوث قربانیوں اور شراکت نے ایودھیا تحریک کے دوران مجھے طاقت اور مدد فراہم کی۔"
مسٹر اڈوانی نے سی بی آئی کی خصوصی عدالت میں ان کے مقدمے کی پیروری کرنے کے لئے اپنے وکیل مہیپال اہلووالیا اور ان کی ٹیم کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ کروڑوں ملکی شہریوں کے ساتھ ، انہوں نے ایودھیا میں عظیم اور خوبصورت رام مندر کو مکمل ہونے کی خواہش کی ہے۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh
http://st-josephs.in/
https://www.darussalambank.com

موسم کا حال

حیدرآباد

etemaad rishtey - a muslim matrimony
© 2020 Etemaad Urdu Daily, All Rights Reserved.