the etemaad urdu daily news
آیت شریف حدیث شریف وقت نماز

ای پیپر

To Advertise Here
Please Contact
editor@etemaaddaily.com

اوپینین پول

بھارت میں کورونا وائرس کے مزید کیسوں سے بچنے کے لئے، کیا لاک ڈاؤن کو مزید دو ہفتوں تک بڑھانے کی ضرورت ہے؟

ہاں
نہیں
کہہ نہیں سکتے
نئی دہلی،17مارچ(یو این آئی)شمالی دہلی میں رونما ہونے والے حالیہ فسادات میں بے قصور افراد اور پا پولر فرنٹ آف انڈیا کے ممبران و عہدیداران کی اندھا دھندگرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے آل انڈیا تنظیم علمائے حق کے قومی صدر مولانا محمد اعجاز عرفی قاسمی نے الزام لگایا کہ حکمراں جماعت اور دہلی پولس اصل مجرموں کی پردہ پوشی کے لیے بے قصوراور معصوم افراد کے خلاف گرفتار کر رہی ہے۔

انہوں نے آج یہاں جاری ایک بیان میں الزام لگایا کہ ا علانیہ مجرمین کو کیفر کردار تک پہنچانے کے بجائے ان کو حفاظتی دستہ فراہم کرنے کے ساتھ بہت بے شرمی کے ساتھ ان کو قانونی تحفظ فراہم کرنے کی بات کررہی ہے۔انھوں نے دعوی کیا حد تو یہ ہے کہ عدالتی تنبیہ اور سخت سر زنش کے باوجود ان عناصر کے خلاف ایف آئی آر تک درج نہیں ہوئی ہے جنھوں نے سر عام اپنی ریلیوں میں گولیاں مارنے اور مظاہرین کو سبق سکھانے کی دھمکی دی تھی۔

 

مولانا قاسمی نے کہا کہ شاہین باغ اورملک کے دوسرے مقامات پر جاری سی اے اے اور این آر سی کے خلاف آئین و دستور کی روشنی میں جاری پر امن احتجاج کودروغ گوئی سے کام لے کر بد نام کیا جارہا ہے اور ان سیاسی رہنماؤوں کے قابل اعتراض بیانات کا نوٹس لینے سے حکومت دانستہ انحراف کر رہی ہے جنھوں نے دہلی اسمبلی انتخابات سے قبل اور اس کے بعد نفرت انگیز بیانات دیے تھے۔ مولاناقاسمی نے دعوی کیا کہ دہلی فساد، فساد نہیں تھا، بلکہ ایک فرقہ کے خلاف منظم سازش تھی جو ملک کے دار الحکومت کی پیشانی پر ایک بد نما داغ ہے اوراس کے سبب عالمی منظر نامے پر ہمارا سر شرم سے جھک گیا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ موجودہ مرکزی حکومت ایک مخصوص نظریے کے تحت کام کر رہی ہے اور ہر اس آواز کو سبوتاژ کردینا چاہتی ہے جو حکومت اور حکومت کی پالیسیوں کے خلاف جمہوری دائرے میں بلند ہوتی ہے۔انہوں نے حکومت پر الزام لگایا کہ پاپولر فرنٹ آف انڈیا جیسی سماجی اور رفاہی تنظیموں کو بد نام کرنا چاپتی ہے، جو بلا تفریق مذہب رفاہی اور فلاحی اور خدمت خلق کے کاموں میں مصروف رہتی ہے۔
انھوں نے حکومت سے یہ اپیل کی کہ وہ دہلی فسادات کے اصل مجرموں تک رسائی اور ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی کے لیے ممبران پارلیمنٹ پر مبنی ایک کل جماعتی وفد وہاں بھیج کر حالات کا نزدیک سے جائزہ لے اور ہائی کورٹ یا سپریم کورٹ کے جج کی نگرانی میں اس خونیں فساد کی منصفانہ جانچ کرائے، تبھی اصل مجرمین تک رسائی ممکن ہوگی اور ان بے قصور افراد کی بے تحاشہ گرفتاری پر روک لگائی جاسکے گیجنھیں بلا وجہ شک و شبہ کی بنیاد پرہراساں کیا جارہا ہے اور انھیں جیل کی سلاخوں کے پیچھے ڈال کر دہشت زدہ کیا جارہا ہے۔

اس پوسٹ کے لئے 1 تبصرہ ہے
Ahmed Says:
Ganguly is a racist, fascist hindu who is showing his needlessly critisizing the innocent Sania Mirza. Ganguly is a cheap hateful hindu who is acting like somany other BJP racist fascist hatefulmembers. India is no longer a democracy but a Hindu Fascist Racist State now. Shame on the BJP that is also causing so much trouble to the Muslims of India. TheInternational community must lay sanctions against india as well as the all the Middle Eastern Countries must expel all the hindus from the middle East. The Arab Leaders must take revenge against the Racist, Fascist Hateful Indian government and the Hindus who are attacking the innocent Muslims. How sad and shameful. real character in

Comment posted on May 26 2020
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh
http://st-josephs.in/
https://www.darussalambank.com

موسم کا حال

حیدرآباد

etemaad rishtey - a muslim matrimony
© 2020 Etemaad Urdu Daily, All Rights Reserved.