the etemaad urdu daily news
آیت شریف حدیث شریف وقت نماز

ای پیپر

To Advertise Here
Please Contact
editor@etemaaddaily.com

تانڈور 24۔ فروری( اعتماد نیوز )
مولانا عبد اللہ عمری مدنی امیر صوبائی جمعیت اہلحدیث،تاملناڈونے کہاکہ والدین کو چاہئے کہ وہ اپنی اولاد کے حق میں دعائیں دیں اور بد دعاؤں سے گریز کریں والدین کی بد دعا اور دعا قبول ہوتی ہے وہ کل رات نیشنل گارڈن فنکشن ہال تانڈورمیں جمعیت اہلحدیث ضلع رنگا ریڈی اور تانڈورکے زیر اہتمام جلسہ عام بعنوان’’ اصلاح معاشرہ‘‘ میں اولاد کی تربیت کے عنوان پر خطاب کررہے تھے مولانا نے کہا کہ والدین اگر دعا کریں تو اولاد صالح ہوگی اسکے بر خلاف چھوٹی چھوٹی باتوں پر والدین اولاد کو بدعائیں نہ دیں اور والدین اولاد پر نظر رکھیں ، انکی صالح تربیت کی فکر کریں اسکولوں میں تعلیم ملتی ہے اخلاق نہیں ملتے تربیت اور اخلاق والدین سے آتے ہیں اس جلسہ سے اپنے خطاب میں مولانا محمد عبد الرحیم خرم جامعی کرسپانڈنٹ دار العلوم رحمانیہ اسکول نے کہا کہ موجودہ دور میں شوہر اور بیوی دونوں میں مذہبی تعلیم کی کمی کے سبب ازدواجی نتشار و اختلافات پائے جاتے ہیں جہاں ہم لڑکیوں کی مادی اعلی تعلیم پر غور کرتے ہیں وہیں انکی مذہبی تعلیم پر توجہ نہیں دیتے جس کے سبب انکی ازدواجی زندگی متاثر ہوتی ہے مولانانے مشورہ دیا کہ عائلی اختلافات میں مسلمانوں کو چاہئے کہ اپنے علماء اور ذمہ داران سے مسائل کو رجو ع کر یں ۔مولانا عبد الرزاق جامعی( ہبلی ) نے اصلاح عقیدہ ضرورت و اہمیت کے موضو ع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج مسلم سماج میں بد اعتقادی عام ہو گئی ہے جیسے محرم و صفر کے مہینہ میں کوئی خوشی کا کام نہ کرنا ،بیماریوں میں چھوت چھات سمجھنا وغیرہ یہ سب اعتقادات اسلام کے خلاف ہیں رسول اللہ ؐ نے ارشاد فرمایا کہ کوئی بھی بیماری چھوت چھات کی نہیں ہوتی ، پرندوں سے بد شگونی بھی نہیں لی جاسکتی اور نہ صفر کے مہینہ کو برا جانا جائے اسکے باوجود بھی ہم بد شگونی لیتے ہیں مومن کے لئے ہر دن،ہر لمحہ قابل مبارک ہے جس میں وہ نیک کام کرتا ہے ۔ مولاناشمیم فوزی( پیس ٹی وی) نے اتباع سنت کے عنوان پر خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اتباع کے معنی پیچھے پیچھے چلنے کے ہیں اللہ تعالی نے رسول اللہ ؐ کو ہمارے لئے نمونہ بنایا ہے اس جلسہ سے اپنے خطاب میں مولانا ثناء اللہ مدنی
( پیس ٹی وی)نے کامیابی کا معیار لوگ یا انبیاء کے عنوان پر خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ایک مسلمان کے لئے سوائے انبیاء کے کوئی بھی زندگی کا معیار نہیں بن سکتے اگر لوگ انبیاء کو معیار بنا لیتے تو وہ کامیاب ہوجاتے اپنی تقریر کو جاری رکھتے ہوئے مولانا ثناء اللہ مدنی نے کہاکہ قرآن میں اللہ نے مالداری کے طور پر قارون کی مثال کوپیش کیا لیکن اسکا مال معیار نہیں بن سکا بلکہ وہ وبال جان ہوگیا قارون اور فرعون کے مقابلے میں موسی علیہ السلام کو معیار بنایا گیا ابو جہل ،ابو طالب ،ابو لہب نبی اکرمؐ ؐکے خاندان کے ہونے کے باوجود رسول اللہ ؐ کو ہی معیار بنایا گیا خود صحابہ اکرام کے زمانے میں اور بعد میں رسول اللہ ہی کو معیار رکھا گیامولانا نے تلقین کی کہ تمام مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ انبیاء و مرسلین کی زندگی ہی کومعیاربنا کر چلیں اسی میں نجات اور کامیابی ہے۔مولانا عبد الرحیم مکی امیر صوبائی جمعیت اہلحدیث ،تلنگانہ نے اس جلسہ کی صدارت کی جس میں بڑی تعداد میں سامعین شریک تھے جبکہ حافظ عبد القیوم ناظم صوبائی جمعیت اہلحدیث ،تلنگانہ جناب با با نظر محمدامیر صوبائی جمعیت اہلحدیث ، گلبرگہ اورمحمد خورشید حسین صدر مسلم ویلفیئرا سوسی ایشن تانڈور بطور مہمان خصوصی شریک تھے۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh
مذہبی میں زیادہ دیکھے گئے
http://st-josephs.in/

اوپینین پول

اتر پردیش میں کیا یہ شہروں کے نام تبدیل کرنا درست ہے اللہ آباد اور فیض آباد سے پرايگراج اور ایودھیا

ہاں
نہیں
بالکل نہیں
http://www.darussalambank.com

موسم کا حال

حیدرآباد

etemaad rishtey - a muslim matrimony
© 2018 Etemaad Urdu Daily, All Rights Reserved.